RSS

!اللہ اور اس کے رسول کے نام

16 Feb

اپنے روزمرہ کے مصروف معاملات میں سے کچھ وقت ہمیں اپنے اللہ، اس کے نبی کے نام کرنا چاہیئے”جلوس سے خطاب کرتے ہو ئے مولانا نے فرمایا۔ مولا نا کے اس خطاب سے پہلے بھی مجھے ایک بات کاخیال اکثر آتا تھا اور خطاب کے بعداس کی شدت میں مزید اضافہ ہوا کہ ہم دین کو اکثر اپنے روز مرہ کے معاملا ت سے الگ کیوں کر دیتے ہیں۔ اب یہ لازم تھوڑی ہے کہ میں کوئی خصوصی اہتمام کروں کہ میں فلاں فلاں عمل اللہ اور اس کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے لیے کرنے لگا ہوں اور میرا فلاں فلاں دن اللہ اور اس کے رسول کے نام ہے اگر میں آپ سے اچھے اخلاق سے با ت کر لوں تو میرا یہ عمل بھی اللہ اور اس کےرسول کے نا م ہوا، اگر صبح اٹھ کے ماں کو مسکرا کے دیکھ لوں، یہ عمل بھی اللہ اور اس کے رسول کے نام ہوا. اگر میں کپڑے بدلتے وقت بایاں ہا تھ یا ٹانگ پہلے با ہر کروں اور پہنتے وقت دایاں پہلے کروں تو یہ عمل بھی رسول کی سنت ہے، سو اسکے نام ہو ا۔ سردیوں کی صبح صبح ایک فقیر میر ے گھر کی بار بار گھنٹی بجائےاور مجھے اپنے گرم بستر کو چھوڑ کر انتہائی کوفت کی سی حالت میں باہر ٹھنڈ میں جا نا پڑے اور اس فقیر کو دیکھ کر غصے میں نہ آ وء ں، برداشت کر لوں، اس کی مدد کر دوں یہ عمل بھی اللہ اور اس کے رسول کے نام ہے۔ اگر میں بھری ہوئی بس میں کسی بڑے کو اپنی سیٹ دے دوں تو میرا یہ عمل بھی اللہ اور اس کے رسول کے نام ہے۔ بس والا مجھ سے کسی با ت پر الجھ پڑے، اور میں صبر کا دامں تھا مے رکھوں اور نرمی سے معاملہ سلجھا لوں تو میرا یہ عمل بھی اللہ اور اس کے رسول کے نام ہوا۔میر ی کا رکا ایکسیڈنٹ دوسر ے آدمی کی غلطی کی وجہ سے ہو جائے،اور میں اسے معا ف کر دوں میرا یہ عمل بھی اللہ اور اس کے رسول کے نا مہ ہوا۔ آفس میں جا کر میں اپنے سے چھوٹے آفیسر کو ، سرونٹ کو خود سلام کروں ، حا ل چال پوچھ لوں، میرا یہ عمل بھی اللہ اور اس کے رسول کےنام ہوا۔ میرا کسی کی بات، درد سننے کو جی نہ کر رہا ہواور میں اس کی با ت دھیا ن سے سن لوں میرا یہ عمل بھی اللہ اور اس کے رسول کے لئے ہوا۔ میں اپنے سرونٹ کے ساتھ اس کے کام میں ہا تھ بٹا دوں، اسکے دکھ درد میں نہ صر ف شریک ہوں بلکہ اسکا حصہ بھی بنوں، میرا یہ عمل بھی اللہ اور رسول کے واسطے ہوا۔ میں بازار شاپنگ کر نے جاوءں اور میرے ساتھ میرا کوئی بچہ نہ ہو (کوئی غبارے لے کے دینے کی ضد کرنے والا نہ ہو ، نہ ہی غباروں کی کوئی ضرورت ہو)اور پھر بھی میں غبارے والے سے غبارے لے لوں، میرا یہ عمل بھی اللہ اور اس کے رسول کے واسطے ہوا، سو اس کے نام ہوا۔ میں سار اد ن کام کا ج کر کے تھکا ہوا گھر واپس لوٹوں اور بیو ی بچوںسے ہنس کے بات کروں، کھانا دائیں ہاتھ سے کھا لوں، مہمان کی مہمان نوازی دل سے کر لوں، اور وضو کر کے دائیں کروٹ سو لوں تو میرا کھانا ،پینا، چلنا،پھرنا، سونا، جاگنا، اٹھنا، بیٹھنا، عرض سارا دن، ہر روزاللہ اور اس کے رسول کے نا م ہوا۔ ہر سال بارہ ربیع الاول کو ہم سب نے بہت سے جلوسوں میں شرکت کی ہوگی، محفل نعت کا انعقاد کیا ہوگا، چاول بانٹے ہوں گے، جھنڈیا ںلگائی ہوں گیٴ۔ سڑکو ں، گھروں کو سجایا ہوگا۔ اس بحث کا حصہ بھی رہے ہوں گے کی آیا بارہ ربیع الاول منانا بھی چاہیے یا نیہں، کیوں نہ اس بارکچھ مختلف سا کریں کہ سارا دن ایسے بیتا ئیں کی دن بھر جوبھی کوئی کام کرٰیں تو یہ سو چیں کہ اگر آپ صلی اللہ علیہ وسلم ہوتے تو یہ کا م کیسے کرتے اور کرتے بھی یا نہیں۔ ویسے سنت پر تو ہر پل چلتے بھرتے عمل کر نا چا ہئے مگر آج کچھ خاص خیا ل اور دھیان دے کر دیکھیںاور پھر شا ید ہمارا یہ عمل ہماری عادت بن جائے۔ اور پھر یوم ولادت پر اس نبی کے لیے، جو اپنے وقت نزع تک اپنی امت کی خیر و بھلا ئی کا فکر مند تھا، اس تخفے سے بھر کر کوئی اور تحفہ نہیں ہوگا کہ اس کی امت اسکی سنت کو اپنا لےاور دنیا آخر ت کی خیر وبھلائی اپنے نام کرلیں

 
14 Comments

Posted by on February 16, 2011 in Urdu Corner

 

14 responses to “!اللہ اور اس کے رسول کے نام

  1. Zeeshan Ahmed

    February 17, 2011 at 12:47 am

    Awesome. SubhanAllah

     
  2. Nighat Ahmed

    February 17, 2011 at 12:48 am

    Welldone FD very well written

     
  3. FD Sheikh

    February 17, 2011 at 12:49 am

    Thank you Zeeshan. JazakAllah.

    Thank you very much Ma’am. I’m humbled.

     
  4. Hassan Mumtaz

    February 17, 2011 at 6:22 pm

    sheikh sab…..
    aaj mein jab namaz e isha ada kerne ko masjid ki taraf jaa rha tha to mein kya dekhta hun…… k pahariyan bani hui hain……. uss per khana kaa’ba ki shabeeh bhi hai…… aur sath mein sound system rakha hua hai jis k sath tv attached hai…… aur lagay huay hain ganay.
    waheen qareeb aik aur pahari hai jahan baqol unn k to naat lagi hui hai…. per yaqeen manain k koi bacha jissay ganay aur naat mein farq pta na ho…. ager wo sunay to dance kerna shuru ker day.

    zara aur agay jaata hun to basant per bajnay waalay naaqooos baj rhay hain aur aik phairi wala baray mazay se baich rha hai…..
    yahan tak k namaz k doraan bhi baaher se chor masjid mein aa rha hai.

    bazaar saja para hai aur hairat ki baat ye hai k bazaar se bhi ziada log sajay huay hain….. khas tor per jawan lerkay aur lerkiyan….. jo apne gher walon k humraah aye huay hain…. aur kissi bhi qisam ki khareedari nahin ho rai kyun k dukaan band hain….. ho rai hai to sirf numaaish.

    tab mein socha k aap se kahoon k iss mozu per bhi kuch likh k hamaray ilm mein izafay ka baais banain aap.

    aapka ALLAH AUR USS K RASOOL K NAAAM perha meine….
    yaqeen maian yun laga k aap ne chori se kaheen mera dil perh liya tha aur wohi likh diya…….

    per iss mein humain uss maulaana ko bhi thora sa thora sa samajhna chaiye……
    mujhe nai pta k unhon ne kis context mein baat ki hogi.
    per aap andaza kerain k woh shakh ye kehtay waqt kitna majboor hoga k KUCH WAQT TO NIKAALO….. aap baat ker rhay hain apni….
    sheikh saab aap yaqeen manain gay bazaar main on average mard se ziada aurtain hoti hain…. aur mard bhi jo hotay hain wo unn aurton ki waja se hotay hain.

    ye thi thori c hamdardi molaana k sath….. kyun k hum jo merzi kertay rahain… molana hans bhi lain to hum kehtay hain molaana aap kyun hans rhay hain… hansna to haram hai islam mein….

    baaqi mein aap ki iss tehreer ka man o ann qail hun.
    WASSALAM O ALAIKUM WA REHMATULLAH I WABARAKAATUHU

     
  5. FD Sheikh

    February 17, 2011 at 6:25 pm

    @ Hassan
    Sub sy pehly tou g Hassan sb boht shukria. ap ny khayalt share karny kya…is kabil samjha… har bars in pahareeyoon wali batoon ko main b observe karta tha or is hwaly sy articles b parhy…n you knw what, kuch logoon ko mallom b hai k yay sub ghalat hai magar wo phr b ya amal dohraty hain..or har sal dohraty hai..yay ajeeb almeya ha.
    oper sy ab in s0ng cum naat ka jo system chal para hai yay b jalti py tail k mutradif hai..
    or Allah or Us k Rasool ko pasand karny ka shukria..ap to masahAllah is bat ko bakhubi samjhty or amal karty hoon gy… i wish k degar log b kuch pa sakain in write ups sy… Ameen
    or wo maulana wala scene kuch esa he tha jesa main ny depict kya…jab main ya likh ra ta na to mery mind ma khayal aya tha k reader shayad “context” walay point ko highlight kary k Maulana ny naajany kis context ma bat ki…agar main wo context b likhta tou shayad reader bore sa ho jata or Asal bat ka itna asar na hota jo maqsood the. :)

     
  6. saima shah

    February 22, 2011 at 4:10 pm

    very well-written fd bhai.ap ko nahi pata kitna hum gain kartay hain aap k articles se! may u always get its ajr..:)

     
  7. FD Sheikh

    February 22, 2011 at 4:13 pm

    Thank you samia. I’m humbled. :) JazakAllah

     
  8. Anas Shafqat

    March 4, 2011 at 12:30 pm

    Very well-written :)

     
  9. Sadiya Akhtar

    May 4, 2011 at 8:57 am

    Well written & Very inspiring fd, MashAllah :)
    same yehi scene hmari khushiyun k sath bhi hai na, k hm khushiyun k lye bari bari cheezon k peechy bhagty hain, intazar krty hain special occasions ka, jb k khushiyan tou choti choti cheezon mai bhi moajood hain.

     
  10. Zainub

    May 4, 2011 at 8:59 am

    awesome

     
  11. Sadiya Akhtar

    May 4, 2011 at 9:03 am

    Well written & very inspiring fd, MashAllah :)
    Same yehi scene hamari khushiyun k sath bhi hota hy na, hm khushiyun k lye bari bari cheezon k peechy bhaagty hain, intazar krty hain special occasions ka, jab k khushiyan tou choti choti cheezon mai bhi hoti hain

     
  12. FD Sheikh

    May 4, 2011 at 9:06 pm

    Thank you Anas, Sadiya, Zainub, :)
    very right u are sadiya! khushyoon ko events k pinjary main qaid kar deya hai hum logoon ny..thats unfortunate.

     
  13. Asma

    May 27, 2011 at 7:37 pm

    Very well written and I pray that may we follow sunnat not only on a single day but every day of the year 24/7

     
  14. FD Sheikh

    May 28, 2011 at 2:59 am

    Ameeen

     

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

 
%d bloggers like this: